ہوٹل میں رہائش اور چند احتیاطی تدابیر٬ نظرانداز مت کریں

 

بدقسمتی سے آج ہمارے معاشرے میں قدم قدم پر احتیاط سے کام لینا انتہائی ضروری ہوگیا ہے بالخصوص محفوظ سفر کو یقینی بنانے کے لیے چند احتیاطی تدابیر کو اپنانا انتہائی فائدہ مند ثابت ہوسکتا ہے- ایک انٹرنیشنل ویب سائٹ LISTVERSE کے مطابق دنیا بھر کے ہوٹلوں میں رونما ہونے والی مجرمانہ سرگرمیوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے- ان مجرمانہ کاروائیوں میں چوری٬ اغواﺀ٬ منشیات کا کاروبار اور انسانی اسمگلنگ عام ہے- ایسے میں جب بھی آپ بیرونِ ملک یا اندرونِ ملک سفر کریں اور کسی ہوٹل میں رہائش اختیار کریں تو آپ کے لیے ضروری چند احتیاطی تدابیر ضرور اختیار کریں کیونکہ اس طرح نہ صرف آپ کسی بڑے نقصان سے محفوظ رہ سکتے ہیں بلکہ کسی کے جال میں پھنسنے سے بھی بچ سکتے ہیں-
 

Check-In
کسی بھی ہوٹل میں رہائش کے لیے ابتدائی منزل یا گراؤنڈ فلور پر کمرہ لینے سے گریز کریں کیونکہ ان کمروں میں چوری باآسانی کی جاسکتی ہے- ماہرین کے مطابق حفاظتی طور پر تیسری اور چھٹی منزل کے درمیان کا کمرہ لیں کیونکہ ان کمروں تک چوروں کی رسائی آسان نہیں ہوتی- تاہم بہت زیادہ بلندی پر بھی کمرہ نہ لیں کیونکہ کسی بھی حادثے کی صورت میں آپ تک رسائی مشکل ہوسکتی ہے-


Leave the TV or Radio On
اگر آپ عارضی طور پر ہوٹل کے کمرے سے کہیں باہر سیر و تفریح یا پھر کسی کام وغیرہ کے لیے جارہے ہیں تو آپ کو چاہیے کہ کمرے میں موجود ٹی وی یا ریڈیو آن چھوڑ جائیں- اس سے یہ تاثر پیدا ہوگا کہ آپ شاید کمرے میں ہی موجود ہیں اور کوئی غیر متعلقہ شخص کمرے میں داخل ہونے سے گریز کرے گا-



Lock Your Door
آپ چاہے کتنی ہی دیر کے لیے باہر کیوں نہ جارہے ہوں کمرے کو کھلا چھوڑ کر ہرگز مت جائیے اور ہوٹل انتظامیہ کی جانب سے فراہم کردہ تمام لاک سسٹم کو کمرہ بند کرنے کے لیے ضرور استعمال کیجیے- آپ کا یہ عمل آپ کو کسی بھی بڑی پریشانی سے محفوظ رکھ سکتا ہے-


Use Your Hotel Safe
اکثر افراد عارضی طور پر بھی باہر جاتے وقت اپنی قیمتی اشیاﺀ ساتھ لے کر چل پڑتے ہیں- آپ کو چاہیے کہ اپنی قیمتی اشیاﺀ مثلا لیپ ٹاپ یا جیولری وغیرہ ہوٹل کی جانب سے مہیا کردہ کمرے میں ہی موجود تجوری میں رکھ کر جائیے کیونکہ انجان شہر یا ملک میں بھی قیمتی اشیاﺀ کو لے کر ساتھ چلنا بھی خطرے سے خالی نہیں- البتہ قیمتی اشیاﺀ کو کمرے میں موجود تجوری میں رکھنے سے ان کے محفوظ رہنے کا امکانات زیادہ ہیں-


Use Your Do Not Disturb Sign
آپ چاہے کمرے میں موجود ہوں یا نہ ہوں لیکن Do Not Disturb کے بورڈ کو کمرے کے باہر لٹکا رہنے دیں کیونکہ اس طرح جرائم پیشہ افراد پر یہی تاثر قائم ہوگا کہ آپ کمرے میں موجود ہیں اور وہ اپنی حرکتوں سے باز رہیں گے-


Your Credit Card on The Check-In Counter
کوشش کیجیے کہ ہوٹل کے بِل نقد رقم کی صورت میں ادا کیجیے اور کریڈٹ کارڈ کے استعمال سے گریز کیجیے کیونکہ ان مقامات پر کریڈٹ کارڈ کی معلومات چوری ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں- اگر چیک اِن کاؤنٹر پر کریڈٹ کارڈ سے ادائیگی کریں بھی تو یاد سے اپنا کارڈ واپس لیجیے تاکہ وہ کسی غلط ہاتھ میں نہ جاسکے-


Place a Flashlight by the Bed
کبھی بھی کچھ بھی ہوسکتا ہے- ہوٹل کے کمرے میں رہتے ہوئے ایمرجنسی لائٹ ہمیشہ اپنے بستر کے قریب رکھیے کیونکہ کسی بھی حادثے اور بجلی کی بندش کی صورت میں آپ اچانک ہوٹل کی عمارت سے باہر نکلنا پڑ سکتا ہے اور اس صورت میں یہی لائٹ آپ کی رہنمائی کرے گی- ایک انداز کے مطابق سالانہ ہر 12 ہوٹلوں میں سے کسی ایک ہوٹل کو ضرور آگ کا سامنا کرنا پڑتا ہے-

Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
10 Sep, 2017 Total Views: 12865 Print Article Print
NEXT 
Reviews & Comments
Some high en -ded Muslims MOVE in on there booked floor with their large staff. They all dressed up in casual clothes.they all wine and dine carefree mood.Allof SUDDEN principals vanished with the files. the vanished principals are well aware if they got key some- body got the duplicate.To know more than that read!!!BY WAY OF DECEPTION
By: IFTIKHAR AHMED KHAN, CALGARY ALBERTA CANADA on Sep, 25 2016
Reply Reply
0 Like
Main Agree nahi karta Yeh Business hai Or Hotel Wale Hospitality main ziada Dhayan Dete hain Chand Waqiat Hote honge lakin baki sab Acha hai...
By: sohail, Karachi on Sep, 23 2016
Reply Reply
0 Like
Nice comments. absolutely agree. Do keep multiple mobile and emergency charger too. no idea when you get power loss and you need emergency contacts.
By: Muhammad Farooqi, Lahore on Sep, 21 2016
Reply Reply
3 Like
hamesha ameero ke liye post banana kabhi garibo ko yad na rakhna hamriwebwalo.
By: azeem, paklahore on Sep, 20 2016
Reply Reply
1 Like
don't worry Azeem. Ager ooper waly tareeqy pe ameer kam nhi krein gy to woh bhi greebon mein shamil ho jaein gy
By: Muhammad Farooqi, Lahore on Sep, 21 2016
2 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
v
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB