Hamariweb Writers Club Articles

LATEST REVIEWS

ہماری ویب کا نیا کارنامہ ’’ہینگ آؤٹ میٹنگ‘‘۔
جیسا کہ 13 جنوری 2017کی ہینگ آؤٹ میٹنگ میں متفقہ طور پرپانچ نکات منظور ہوئے تھے اورجس میں سےنکات نمبر دو میں کہا گیا تھا کہ ’’کوشش کی جائے گی کہ ابتدائی طور پر ہماری ویب ’رائیٹرز کلب‘ کے سینئر اراکین کو مضامین از خود آن لائن کرنے کے طریقہ کار سے آگاہ کردیا جائے۔ یا انہیں یہ اختیار دے دیا جائے کہ وہ مضامین کو آن لائن کرسکیں، تاکہ جس قدر جلد ہوسکے مضامین ہماری ویب پر آن لائن ہوجایا کریں‘‘۔ اور 21 جنوری کی صبح سے یہ عمل جاری ہوچکا ہے، اس شاندار کامیابی پر ہماری ویب کے تمام اراکاین کا شکریہ۔ انسانی فطرت ہے کہ جب ایک سہولت میسرہوجائے تو دوسری سہولت کی خواہش فوراً ہوجاتی ہے۔ تو جناب ابرار احمد صاحب اور مصدق رفیق صاحب ایک اور سہولت درکار ہے کہ کالم آن لائن ہونے کے بعد کالم نگار کو کچھ وقت کےلیےاپنے کالم پر کچھ غلطیوں کو درست کرنے کا موقعہ دیا جائے،انسانی فطرت ہےکےلاکھ مرتبہ پروف ریڈنگ کے باوجود کوئی نہ کوئی غلطی رہ جاتی ہے۔ لہذا اگریہ سہولت بھی دیدی جائے تو کالم میں غلطیاں کم سے کم ہونگیں۔ شکریہ
By: Syed Anwer Mahmood, Karachi on Jan, 21 2017

ہماری ویب کا نیا کارنامہ ’’ہینگ آؤٹ میٹنگ‘‘۔
منیر بھائی بے انتہا مشکور ہوں
By: Syed Anwer Mahmood, Karachi on Jan, 19 2017

ہماری ویب کا نیا کارنامہ ’’ہینگ آؤٹ میٹنگ‘‘۔
جناب انور محمود صاحب ---بڑے عمدہ پیرائے میں اور اتنی مہارت سے آپ نے تقریب کا حال موبائیل اور کمپیوٹر کی اسکرین پر پھیلایا ہے کہ میں محظوظ بھی ہوتا رہا اور مختلف نکات و تجاویز سے آگاہ بھی ہوتا رہا اور کہیں بھی اکتاہٹ کا شکار نہیں ہوا -

لفظ "تقریب" اس لئے لکھا ہے کہ آپ کے انداز تحریر کی بدولت یہ یہ میٹنگ ایک تقریب کے روپ میں سامنےآ رہی ہے - ایسے لگتا ہے کہ کسی قسم کا بوجھ لئے بغیر تمام شرکاء سنجیدہ مسائل پر بات چیت بھی کر رہے ہیں اور ان کے حل بھی ڈھونڈ رہے ہیں -

یہ آپ کی عبارت کا کمال ہے -

اللہ تعالیٰ کی بارگاہ میں دعا گو ہوں کہ آپ کے سارے امور آپ کی خواہش کے بموجب کامیابی سے پایہ تکمیل کو پہنچ جائیں --آمین
By: Munir Bin Bashir, Karachi on Jan, 19 2017

ہماری ویب ’رائیٹرز کلب‘کی پہلی ہینگ آؤٹ میٹنگ
میں اس میں شریک نہیں ہو سکا -اپنے کمپیوٹر میں مطلوبہ اشیاء تنصیب کروا کے اپنی شرکت کے انتظامات جلد ہی کرلوں گا -

یہ امر خوش آئند ہے کہ ہم تمدن کے جدید ترین ذرائع اور ٹیکنالوجی سے زیادہ سے زیادہ استفادہ کر رہے ہیں اور اپنے ادیبوں کو بھی اس سے آگاہ کر کے جدید زمانے کے ساتھ ہم آہنگ ہونے کا موقع دے رہے ہیں - اس طرح ان میں موجود اعتماد کو مزید بالیدگی ملے گی -

اس دور میں وہی قومیں ، نسلیں اور وہی تہذیب و تمدن زندہ رہیں گی جو وقت کے تقاضے اور مطالبے ساتھ اٹھتے اٹھتے نئے تقاضوں اور مطالبوں اپنائیں گی -
کسی بھی ادارے میں اس طرح کی پیش قدمیاں منتظمین کے ولولے کو ظاہر کرتی ہیں کہ وہ کتنا جلد ان تقاضوں سے ہم آہنگ ہو نا چاہتے ہیں - ہماری ویب نے ماشااللہ یہ ثابت کردیا ہے -
اس کی بدولت دوسرے شہر والوں سے بھی ملاقات ہو جائیگی - نیز کئی دوسری مشکلات جو خود کراچی والوں کو میٹنگ کی جگہ پہنچنے میں آتی ہیں کم ہو جائیں گی -

میں ‘ہماری ویب ‘ کو اس طرح کے انتظامات کرنے پر مبارک دیتا ہوں
By: Munir Bin Bashir, Karachi on Jan, 17 2017

جدید دور میں ہماری ویب کی خدمات
السلام علیکم ہماری ویب کے ممبران کی تعداد کتنی ہے اور ہماری ویب کو کتنے افراد نے پسند کیا ہے
By: Muneer Ahmad Khan, Rahimyarkhan on Jan, 13 2017

جدید دور میں ہماری ویب کی خدمات
السلام علیکم ہماری ویب رایٹر کلب کیا میں آپکی ٹیم میں شامل ہو چکا ہوں اور اللہ پاک کا لاکھ لاکھ شکر ہے کہ آج میں نے اپنے آرٹیکل کی نصف سنچری مکمل کر لی ہے اور انشاء اللہ بہت جلد سنچری بھی مکمل کر لوں گا ہماری ویب زندہ با د
By: Muneer Ahmad Khan, Rahimyarkhan on Jan, 13 2017

ہماری ویب لکھنے والوں کی ماں ہے
Humari web is a informative web & I like this web so much.
By: Dua, Karachi. on Oct, 07 2016

ہماری ویب کا ایک اور مثالی کردار
بہت خوب مسرت صاحب آپ کی تحریر قابل تحسین ہے، اچھے کام کو سرہانا بھی نیکی ہے، شکریہ اور مبروک
By: Dr Rais Ahmed Samdani, Karachi on Aug, 01 2016

ہماری ویب رائٹرز کلب: نئے عہدیداران کا انتخاب اور ایک پُروقار تقریب‎
زیادہ بہت زیادہ
ہماری ویب کے ایک اجتماع میں ان سے ملاقات ہوئی تو سوچا ان سے پوچھوں کہ نام تو آپکا بہت لمبا ہے، مضامین کی تعداد کتنی لمبی ہے لیکن ہمت نہیں پڑی، پھر اس سال 13 مارچ کو ان سے پھر ملاقات ہوئی اور دیکھا بھرئے مجمع میں وہ اپنے گھر کی باتیں بتارہے تھے، وہ کہہ رہے تھے میں جب گھر پہنچ کر اپنی بیگم سے کھانا مانگتا ہوں تو وہ کہتی ہیں ، کھانا بعد میں کھا لیجیے گا پہلے آپ اپنا مضمون لکھ لیں، تو میں لکھے بغیر تو کھانا بھی نہیں کھاتا۔ ہم نے سوچا ہم سے کچھ زیادہ لکھ لیے ہونگے۔ لیکن 4 مئی کو جب ہم ایک ایک کو بتارہے تھے کہ آج ہمارئے تین سو (300) مضامین مکمل ہوگے ہیں ، اس دن انکا بھی ایک مضمون شایع ہوا اور اسکا نمبر دیکھ کر ہمیں ایسا لگا کہ جیسے بونس واشنگ پاوڈر کا اشتہار چل رہا ہو، جس میں ایک خاتون کہتی ہیں ‘‘زیادہ بہت زیادہ’’، یہ ہی حال انکے مضامین کی تعداد کا ہے، ہمارئے تین سو (300) کے مقابلے میں ‘‘زیادہ بہت زیادہ’’ ۔ ہماری قسمت اچھی تھی کہ کبھی ان سے پوچھا ہی نہیں کہ انکےمضامین کی تعداد کیا۔ کون ہیں وہ آیئے مل لیجیے۔۔۔۔۔
جناب محمد اعظم عظیم اعظم صاحب کے 4 مئی کو ہماری ویب پر شایع ہونے والے انکےمضمون کے ساتھ ہی ہماری ویب پر انکے مضامین کی تعداد نو سو (900) ہوگئی ہے۔ جناب محمد اعظم عظیم اعظم صاحب میری جانب سے آپکو بہت بہت مبارک ہو، دعا گو ہو کہ آپکا قلم سچ کی آواز ہمیشہ بلند کرتا رہے، آمین۔
By: Syed Anwer Mahmood, Karachi on May, 06 2016

ہماری ویب کا ہے اندازِبیاں اور
صابر عدنانی صاحب ، آپ نے ہماری ویب کی خوبصورتی کو بہت خوبصورتی سے بیاں کیا ہے ۔ جڑے رہیئے ۔ شکریہ
By: Sh. Khalid Zahid, Karachi on Apr, 29 2016

MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB