امراضِ معدہ، اسباب اور علاج

(Iftikhar Ul Hassan Rizvi, Gujranwala)

انسانی جسم ایک خود کار مشین ہے، قدرت نے اس طرز پر بنایا ہے کہ ہر عضو اپنا کردار اور کام اپنی حدود میں بغیر کسی مزاحمت کے کرتا ہے۔ جب انسان اپنی غلطی، غفلت اور مسائل کی وجہ سے ان اعضأ اور جسم کی ضروریات کے مطابق ان کا خیال نہیں رکھتا تو پریشانیاں اور بیماریاں جنم لیتی ہیں۔ معدہ انسانی جسم کا ایک اہم حصہ ہے۔ انسانی جسم میں توانائی، حرکت اور نشو و نما کی بنیادیں اسی میں ہوتی ہیں۔ انسان جو کچھ کھاتا ہے، اسے کھا کر چبانا، ہضم کرنا اور پھر سے جسم انسانی کا حصہ بنانا یہ سب کام معدہ اور اس کے معاون اعضا ہی کرتے ہیں۔ نشاستے، لحمیات، حیاتین اور معدنیات انسان کی خوارک کا حصہ ہیں، ان اجزأ کا ایک فیصد استعمال ہوتا ہے اور باقی ناقابلِ ہضم اجزأ معدہ جسم سے خارج کرتا ہے۔ خوراک ہضم کرنے میں لعاب کا اہم کردار ہوتا ہے۔ اگر لعاب ٹھیک نہ ہو تو نظامِ انہضام میں خرابیاں پیدا ہو جاتی ہیں۔

اس مضمون میں کوشش ہے کہ اسے عام فہم انداز میں پیش کروں تا کہ ہر پڑھنے والے کو فائدہ پہنچے اور اسے اپنے معدہ کی اصلاح میں مدد ملے۔ معدہ کی تکالیف میں عمومی طور پر ورمِ معدہ، نظامِ ہضم کی خرابیاں، بھوک نہ لگنا، پیٹ میں ریاح ، گیس، تبخیر، انتڑیوں کا سکڑ جانا اور السر یعنی معدہ کے زخم وغیرہ شامل ہیں۔ معدہ کا ورم جب حادّ ہو جائے تو معدہ کا داخلی حصہ اور دیواریں سرخ اور سوجی ہوئی حالت میں تبدیل ہو جاتی ہیں ، اس سے معدہ کا درد، قے، متلی، سینہ کی جلن سمیت کئی پریشان کن علامات کا ظہور ہوتا رہتا ہے۔ معدہ کی ان بیماریوں کی وجہ سے انسان کا پورا جسم متاثر ہوتا ہے اور مزید کئی بیماریوں کے اسباب پیدا ہوتے ہیں۔ سر کا درد، آدھے سر کا درد، نظر کی کمزوری، جگر کا تازہ خون کی پیدائش روک دینا، ہڈیوں کا درد، گردوں میں خرابیاں، وزن میں کمی، مردوں میں احتلام و جریان، خواتین میں لیکوریا اور ماہواری کی خرابیاں، نیند میں خرابی اور ذہنی انتشا ر و تناؤ۔۔ یہ سب وہ مسائل ہیں جن کا بالواسطہ یا بلاواسطہ معدہ سے لازمی تعلق ہے۔

معدہ کی بیماریوں کے اسباب:

معدہ کی بیماریوں میں معدہ کا ورم اور السر نمایاں ہیں۔ اس کی بنیادی وجہ فاسٹ فوڈ، غیر مسلم ممالک میں خنزیر جیسے جانور کا حرام گوشت، زیادہ تیل اور گرم کھانا، بازاری اچاری کھانے، سگریٹ نوشی، شراب و الکوحل ، بروقت نہ کھانا، جنسی عمل میں زیادتی، سوئے تغذیہ ( غذائی کمی یا لازمی غذائی اجزاء کا جذب نہ ہونا) عفونت جراثیمی، جیسے کہ ایچ پائلوری انفکشن، آنتوں کی عفونت، نمونیا، مسمومیت غذائی، اینٹی بائیوٹک ادویات کا غلط استعمال، دافع درد انگریزی ادویات (ڈکلوفینک سوڈئیم، ڈکلوفینک پوٹاشئیم، آئیبو پروفین، انڈو میتھاسون، فینائل بیٹازون، کوٹیزون، اسپرین) اور کیمو تھراپی کے لئیے استعمال ہونے والی ادویات۔ انگریزی ڈاکٹر صاحبان دافع درد ادویات کے ساتھ احتیاطاً رینیٹیڈین، زینیٹیڈین اور اومپرازول استعمال کرواتے ہیں اس کا مقصد مریض کو ان ادویات کہ ممکنہ خطرات سے بچانا ہوتا ہے جو کہ معدہ کی تکایف کی صورت میں ہوتا ہے۔ ۔ جنسی ہارمون اور کورٹی سون کا استعمال السر پیدا کرسکتا ہے۔

شراب نوشی‘ تمباکونوشی اور تفکرات کے علاوہ صدمات بھی السر پیدا کرتے ہیں۔ جیسے کہ خطرناک نوعیت کے حادثات‘آپریشن‘ جل جانے اور دل کے دورہ کے بعد اکثر لوگوں کو السر ہوجاتا ہے۔ میں خود اس حالت میں مبتلا رہ چکا ہوں۔ اس کی توضیح یہ ہے کہ صدمات چوٹ اور دہشت کے دوران جسم میں ایک ہنگامی مرکب ہسٹامین پیدا ہوتا ہے یہ وہی عنصر ہے جو جلد پر حساسیت کا باعث ہوتا ہے۔ یقین کیا جارہا ہے کہ اس کی موجودگی یا زیادتی معدہ میں السر کا باعث ہوتی ہے۔ اسی مفروضہ پر عمل کرتے ہوئے السر کی جدید دواؤں میں سے سیمیٹیڈٰن بنیادی طور پر ہسٹامین کو بیکار کرتی ہے اور یہی اس کی افادیت کا باعث قرار دیا گیا ہے۔ ایسی خوراک جس میں ریشہ نہ ہو۔ جیسے کہ خوب گلا ہوا گوشت۔ چھنے ہوئے سفید آٹے کی روٹی السر کی غذائی اسباب ہیں۔

اکثر اوقات السر خاندانی بیماری کے طور پر بھی ظاہر ہوتا ہے۔ آپس میں خونی رشتہ رکھنے والے متعدد افراد اس میں بیک وقت مبتلا ہوجاتے ہیں۔ اس کا یہ مطلب بھی لیا جاسکتا ہے کہ ان میں تکلیف وراثت میں منتقل ہوتی ہے یا یہ کہہ سکتے ہیں کہ ان کے بودوباش کا اسلوب‘ کھانا پینا یا عادات ایک جیسی تھیں۔ اس لیے ان کو السر ہونے کے امکانات دوسروں سے زیادہ رہے50فیصدی مریضوں کو السر معدہ کے اوپر والے منہ کے قریب ہوتا ہے وہ اسباب جو معدہ میں زخم پیدا کرتے ہیں وہ بیک وقت ایک سے زیادہ السر بھی بنا سکتے ہیں لیکن 90فیصدی مریضوں میں صرف ایک ہی السر ہوتا ہے۔ جبکہ 10-15فیصدی میں ایک سے زیادہ ہوسکتے ہیں۔

اس پر حکمأ اور معالجین متفق ہیں کہ السر کے متعدد اقسام جلد یا بدیر کینسر میں تبدیل ہو جاتی ہیں کیونکہ اس کی سب سے بڑی خرابی یہ ہے کہ بروقت علاج نہ ہونے پر یہ پھٹ جاتا ہے، عموماً مریض کو اس کا احساس اس وقت ہوتا ہے جب قے کے ساتھ خون آنا شروع ہو جاتا ہے۔ اس کے پھٹنے میں شراب نوشی، سگریٹ نوشی اور دافع درد ادویات کا اہم کردار ہوتا ہے۔

السر کی تمام پیچیدگیاں خطرناک ہوتی ہیں، ان میں سے کوئی بھی علامت یا پچید گی جان لیوا بھی ثابت ہو سکتی ہے۔ السر کا مریض زندگی سے مایوس، پریشان و بے چین اور اعصابی تناؤ کا شکار رہتا ہے، میرا ذاتی تجربہ ہے کہ لمبی چوڑی تنخواہوں اور وی آئی پی کلچر میں رہنے والوں کو جب یہ بیماری لاحق ہوئی تو صحت کے ساتھ ساتھ سب کچھ برباد اور تباہ ہو گیا۔ اس مختصر مضمون میں معدہ کے امراض کے اسباب و علاج مکمل لکھنا ممکن نہیں، آگہی اور علاج میں معاونت مقصود ہے۔ جس کسی کو بھی یہ تکلیف محسوس ہو اسے چاہیئے کہ فی الفور کسی مستند طبیب سے رجوع کرے۔ آپ کے آس پاس میں بہت سارے نیم حکیم آپ کو ملیں گے، تعویذ اور دم والوں کی بھی بھرمار ہو گی مگر یاد رکھیں علاج کروانے کی ترغیب ہمیں اسلام اور پیغمبر اسلام ﷺ نے دی ہے۔ اس علاج میں کچھ میڈیکل ٹیسٹ بھی کروانے پڑتے ہیں۔ اس لئیے کسی منجھے ہوئے حکیم یا ڈاکٹر سے مشورہ کریں، دم اور تعویذ کے چکر میں پڑ کر اپنا وقت برباد نہ کریں ۔ اولیأ کاملین کی دعا اثرات سے بھرپور ہوتی ہے اور اس میں کوئی شک کی گنجائش نہیں ہے۔

امراض معدہ کا آسان علاج:
میری عادت ہے کہ میں انٹرنیٹ یا اخباری مضامین میں کوئی نسخہ یا علاج نہیں لکھتا کیونکہ اگر پڑھنے والے کی سمجھ میں نہ آئے تو نسخہ کی ترکیب و استعمال کے غلط ہو جانے سے زبردست نقصان کا اندیشہ موجود ہوتا ہے۔ عمومی طور پر میں میڈیا کے ذریعہ نسخہ جات کی بجائے خواراک سے علاج کو ترجیح دیتا ہوں۔ یہاں کچھ علامات کے ساتھ آسان علاج پیش کرتا ہوں تاہم گذارش ہے کہ اگر کسی کی سمجھ میں نہ آئے تو اس وقت تک استعمال نہ کرے جب تک مجھ سے یا کسی اچھے طبیب سے مشاورت نہ کر لیں۔

نسخہ نمبر1:
اگر سر میں درد رہتا ہے، پاخانہ وقتِ مقررہ یا معمول میں نہیں ہے، نیند کی زیادتی ہے تو کسی اچھے دواخانے کی بنی ہوئی اطریفل زمانی ناشتہ کے بعد ایک چھوٹا چمچ پانی کے ساتھ کھائیں۔ رات سونے سے قبل چار عدد انجیر نیم گرم دودھ کے ساتھ۔ صبح نہار منہ زیادہ سے زیادہ تازہ پانی پئیں۔

نسخہ نمبر 2:
اگر سر میں درد، جسم میں تھکاوٹ کمزوری، قبض اور پاخانہ درد وجلن کے ساتھ ہو یعنی بواسیر کی علامات ظاہر ہو رہی ہوں یا پاخانہ میں خون خارج ہوتا ہو تو جوارش جالینوس ایک چھوٹا چمچ رات کے کھانے کے بعد پانی کے ساتھ، جوارش کمونی ناشتہ کے بعد ایک چھوٹا چمچ پانی کے ساتھ۔ چار عدد انجیر دوپہر کے کھانے کے بعد نیم گرم دودھ کے ساتھ۔ مدت علاج دو مہینے۔
نسخہ نمبر 3:
معدہ کی تکالیف کی وجہ سے نظر اور دماغ کمزور ہو گیا ہو، قبض کا احساس ہو اور کھانا ہضم نہ ہوتا ہو، سر میں درد، چکر ، آدھے سر کا درد ہو تو ایسی علامات میں شربتِ فولاد دو چمچ صبح شام، اطریفل اسطخودوس رات میں ایک چھوٹا چمچ، مربہ ہریڑ چار عدد نیم گرم دودھ کے ساتھ رات میں۔ مدت علاج دو ماہ۔
نسخہ نمبر 4:
اگر سینہ میں جلن، تبخیر، قے اور معدہ میں درد کا احساس ہو تو یہ علامات بنیادی طور پر السر کی طرف اشارہ کر رہی ہیں اس کی تشخیص براہِ راست مشاورت اور چیک اپ کے بغیر نا ممکن ہے۔ اس لئیے اپنے طبیب سے ضرور ملیں۔ کچھ مفید تراکیب و علاج یہ ہیں کہ ایسے مریض کو ہلدی کے زیرو سائز کیپسول بنا کر دیں، دو کیپسول صبح شام پانی کے ساتھ۔ زیادہ سے زیادہ مائع خوراک بشکل دودھ، جوس اور صاف پانی دیں۔ میٹھا اور ترش چیزوں سے پرہیز۔

پرہیز:
معدہ کی بیماریوں میں مبتلا تمام مرد و عورتیں ہر قسم کی ترش کھٹی ، گھی، مرچ مسالہ، گوشت اور بازاری خوارک سے بچیں۔ فاسٹ فوڈ کو خود کے لئیے حرام سمجھیں۔ سگریٹ نوشی کسی زہرِ قاتل سے کم نہیں۔ شادی شدہ خواتین و حضرات جنسی عمل میں اعتدال برتیں۔
خوراک:
نہار منہ صاف تازہ پانی، ٹھنڈا دودھ، جوس، پھل، ہرے پتے والی سبزی، ریشہ دار غذائیں، انجیر اور ہریڑ کا استعمال کریں۔
مشاورت کے لئیے ان ذرائع سے رابطہ کیا جا سکتا ہے۔
فیس بک پیج: https://www.facebook.com/iftikharulhassan.rizvi
ای میل: mi.hasan@outlook.com
سکائپ کال: mi.hasan
Disclaimer: All information is provided here only for general health education. Please consult your health physician regarding any treatment of health issues.
Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
21 Aug, 2013 Total Views: 8770 Print Article Print
NEXT 
About the Author: Iftikhar Ul Hassan Rizvi

Writer and Spiritual Guide Iftikhar Ul Hassan Rizvi (افتخار الحسن الرضوی), He is an entrepreneurship consultant and Teacher by profession. Shaykh Ift.. View More

Read More Articles by Iftikhar Ul Hassan Rizvi: 62 Articles with 140380 views »
Reviews & Comments
sir abdomenal worms k liye kya krna chahiye constipation abdomenal pain loss of appitite nausea severe cough ye sub is k sath hy.
By: mujahid, gujranwala on Nov, 13 2017
Reply Reply
0 Like
محترم ڈاکٹر صاحب میرا معدہ ٢٠ سال کی عمر سے کمزور ہونا شروع ہوا اب میری عمر ٣٧ سال ہے شروع میں رات کے آخری حصے میں نیند کے دوران دردنیچے آنتوں کے بائیں طرف ہوتا کھبی درست کھبی تکلیف گزارا ہوتا تھا ہاں زیادہ اونچی آواز سے بولنے یا زیادہ زوردار قہقہے لگانے سے تکلیف بڑھ جاتی مگر اب تین سالوں معاملہ سنگین ہوگیا مرغن ترش کٹھی اشیاء خصوصا دودھ وجیسے چیزیں کھانے سے بے چینی بڑھ جاتی ہے نیند میں خلل آگیا ھے خاص کر دن کو آرام کرنے کے وقت جب بستر پر لیٹتا ھوں تو پہلے نیند آنا شروع ھوتے ھی یک دم جھٹکا لگتا ہے جیسا کہ سانس رک گئی ھو اپنے خیال میں پہلے یہ محسوس کرتا کہ دل کا دورہ ہے مگر بہت سارے ڈاکٹروں کے پاس گیا ھوں تمام ڈاکٹرز یہی کہتے کہ نہیں ایسا کوئی مسئلہ نہیں البتہ اعصابی کمزوری ہے بس اکثر پیروکسین اور ریبپازول وغیرہ لیتا ھوں اور ساتھ پرہیز بھی رکھتا ھوں تو کچھ گزارا ھوتاہے اگر کوئی رہنمائی فرمائے تو مہربانی ھوگی جزا ک اللہ
By: Matiullah, Muslimbagh on Oct, 19 2017
Reply Reply
0 Like
Asslam alikum sir mojy kamzori bohat ha bhok b kam lagti ha kam karta hon to jisam bohat jaldi thak jata ha is ka koi ilaj btaden
By: Faisal, Faislabad on Aug, 13 2017
Reply Reply
2 Like
Asalam o alikum sir mjy kuch din pehle typhoid hoa tha anti biotic ki wja se meada both khrab ho gya hy bhok lgti hy leken khurak hazam nhi hoti,subah k time 4 bar pakhana k liye jata hon ya phir qabz ho jati hy Esomeprazple istemal kr RHA hon mehrbani farma k koi nuskha batain. Dua go Muhammad Shafiq
By: muhammad shafiq, Mianwali on Aug, 09 2017
Reply Reply
0 Like
iftkhar hassan sahib apna skyp or email edrss day dain ap se aik msla k silsla mn mshwra drkar hay sayyyellabeed@gmial.com
By: sayyed labeed ghaznavi, lahore on Aug, 20 2015
Reply Reply
0 Like
Salam, mujhe 7 saal se hepatatis b hai or me ne agha khan me elaj karwaya virus not dedected hogya phir dobara dedected hogia phir me ne kisi hakeem se elaj krwaya 8 maheeny k andr not dedected hogya phir dedected hogaya ab me bht zeyada prashan ho me kya kro ab ti stamoch me b soozish ha8 me bht zyada preshan ho bl k had se zyada plz meri help kre plzzzzzzzzz
By: miss mahnnoor, karachi on Jul, 11 2015
Reply Reply
0 Like
Add our new skype ID: rizvionline.com
By: Iftikhar Ul Hassan Rizvi, Gujranwala on Nov, 22 2013
Reply Reply
0 Like
assalam o alaikum,sir mery father k galy mai bht he ziada takleef hai,taqreebn 5maheeny sy muslsl elaaj krwaya mgr koi frq nhi hua doctors operation ka kehty hn mgr kehty hn k is ki koi garantee nhi hy k is sy gala theek hojaeyga. sir, un ki aawaz bht he beth gae hy bht pareshan hn, hm sb bhi unko dekhty hn tou hmen bhi bht dukh hota k ub pata ni hm apny father ki aawaz sun paengy ya nhi plzzzz sir aap hi kch bta den
By: zakariya ahmed, karachi on Sep, 06 2013
Reply Reply
0 Like
Asslam O Alikum
Sir, mein ny Sugar ka Elaj para or mujy khoshi howi . mein apni baji ko zaroorye Elaj batoo gee or iss par wo Aaml be karei ge.Aa ka buhat buhat sukarien Aap ittni Achi bateen battaten hain
By: Mano, Sahiwal on Aug, 30 2013
Reply Reply
0 Like
Wa alaikum salam
Best wishes for sisters. Alah bless with good health.
regards
By: Iftikhar Ul Hassan Rizvi, Gujranwala on Sep, 04 2013
0 Like
آپ سکائپ پر کال کر لیں، مکمل مشاورت سے علاج تجویز کر دیا جائے گا۔ انشاء اللہ
By: Iftikhar Ul Hassan Rizvi, Gujranwala on Aug, 24 2013
Reply Reply
0 Like
BOHAT SHUKRIYA BHAI JAAN APKA YE MSG PARH K MUJE BOHT FAIDA HUA .

sir,
mere stomach ma left side pa oper daily dard rehta ha or tezabiyat zehni dabao b boht si medicine use ki par kuch arsa k bad phir yehi alam ha kuch advise kar den plz.....
Thank, soooooooo much
By: NAWAZISH, Sialkot on Aug, 23 2013
Reply Reply
0 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB