دل میں چھبن سی رہتی ہے ۔۔۔
Poet: امیرالدین امیر
By: ameeruddin ameer, shahdadpur

 دل میں اکثر چبھن سی رہتی ہے
اسکی ہر دم لگن سی رہتی ہے

دن گذرتا ہے بوجھل سا
رات ساری کھٹن سی رہتی ہے

یہ تو سچ ہے کہ چھوڑ جائے گا وہ
اس سے پھر بھی لگن سی رہتی ہے

دل میں آتش فشاں سا پھٹتا ہے
جسم و جاں میں جلن سی رہتی ہے

ہر گھڑی رنج و غم کے صدمے ہیں
زندگی یوں مگن سی رہتی ہے

اس کے آنے کی اک نوید سی ہے
دل میں ٹھنڈی پون سی رہتی ہے
 

Rate it: Views: 3 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 10 Oct, 2017
About the Author: ameeruddin ameer

Visit 2 Other Poetries by ameeruddin ameer »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.