پھر کسی وقت کام ہوجائے
Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

کس قدر اہتمام ہوجائے
پھر کسی وقت کام ہوجائے

اپنی صورت پہ تبصرہ کر
اپنی سیرت کا نام ہوجائے

مجھ کو معلوم تھا یہ دن ہے
ہم تو چپ احترام ہوجائے

چشمِ افلاک دیکھتی ہے
سال نو کا یہ جام ہوجائے

ہم کو معلوم کب ہوا ہے
بس کر اب لبِ بام ہو جائے

کون چھینے گا اب وفا کو
بُت بنا لو ، قیام ہو جائے

میں دعا کے حصار میں ہوں
جب بھی آئے تو کام ہو جائے

تیری محفل سے آ گئی وشمہ
جس طرح سے غلام ہوجائے

Rate it: Views: 3 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 15 Apr, 2018
About the Author: washma khan washma

I am honest loyal.. View More

Visit 4279 Other Poetries by washma khan washma »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.