اجنبی
Poet: Hukhan
By: Hukhan, karachi

اجنبی شہر کے
اجنبی راستے
کوئی تو سنے
اس دل کے واسطے
ہر راہ میں ہیں
بے نشان راستے
دیکھے ہم نے
عجب سے ہر طرف حادثے
بنائےدنیا نے دیکھائے تماشے
حسین چہرے اس پر
گناہوں کے ہر پل سائے
اترتے زہر لہو میں
زخمی روح کے بکھرتے جال سے
اجنبی شہر کے اجنبی راستے
ہاں کچھ تو ہو
مسکرانے کے واسطے

Rate it: Views: 6 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 06 Mar, 2018
About the Author: Hukhan

Visit 405 Other Poetries by Hukhan »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
v sad
By: rahi, karachi on Mar, 07 2018
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.