زمانہ
Poet: farah ejaz
By: farah ejaz, Karachi

بدل گیا زمانہ
ہر روز ہی ایک نیا تماشہ
کہیں میلے لگتے ہیں لوگ گلے ملتے ہیں
کوئی تنہا سا اکیلا ہے کھڑا
کہیں شراب شباب و رنگ و بوکا ہے سماں
کہیں آہو فغاں سے تھر تھرا رہا ہے جہاں
دل بھی بکتے ہیں ہمدم بھی بکاؤ مال ہے یہاں
دنیا ہے عجب بھانت بھانت بولیاں ہیں یہاں
منافقت پر شرافت کی چربی چڑھائے
تو یہاں بیٹھا ہے وہ وہاں ہے بیٹھا اور میں یہاں
کچھ تو کہئے فرح بی بی چپ سادھ لی ہے ایسے کیوں
کیا ضمیر کی عدالت نے آپ کو ہی ملزم ٹہرا دیا ہے یہاں

Rate it: Views: 6 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 02 Jan, 2018
About the Author: farah ejaz

My name is Farah Ejaz. I love to read and write novels and articles. Basically, I am from Karachi, but I live in the United States. .. View More

Visit 143 Other Poetries by farah ejaz »
 Reviews & Comments
DEEP AND NICE ONE AS USUAL
BE HAPPY AND STAY BLESSED ALWAYS
By: uzma, Lahore on Jan, 05 2018
Reply Reply to this Comment
THNX DEAR AAJ KAL TO YAQEEN MANIYAI koyee share soojta hi nahi ..... bus kabhi kabhi hi ya yun kehlain khal khal hi kuch chota mota likh liya to likh liya .... shukriya and Jazak Allah Hu Khair
By: farah ejaz, Karachi on Jan, 09 2018
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.