اپنے من کی ویرانی سے گھبرا کر
Poet: Saima Shahid
By: Saima Shahid, Multan

اپنے من کی ویرانی سے گھبرا کر
میں نے اس کے مکیں کو سوچا
جب وہ تھا تو کتنی خوشیاں
من آنگن میں گھومتی تھیں
اسکی باتیں
اسکی ہنسی
کیسے مجھ کو شاد رکھتی تھیں
اور میرے چہرے پہ إک
سجیلی مسکان سجی رہتی
لیکن اس کے جانے سے
اب
من میں کیسی ویرانی ہے
کتنا گہرا سناٹا ہے
یادیں ہیں کہ
حسرت سے دیوارودر کو تکتی ہیں
اداسی بھی سر نہیوڑاے
إک کونے میں بیٹھی ہے
لاکھ میں اس کو دھتکاروں
دھکے دے کےمن آنگن سے باہر نکالوں
وہ روتی ہے کُرلاتی ہے
دہلیز سے چمٹی جاتی ہے

Rate it: Views: 7 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 04 Dec, 2017
About the Author: Saima Shahid

Visit Other Poetries by Saima Shahid »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.