میرے اندر تو ہی تو ہر پل فقط تو ہی تو ہوتا ہے
Poet: farah ejaz
By: farah ejaz, Karachi

محبتوں کا شاید یہی انجام ہوتا ہے
خوشی کے بعد غم طویل ہوتا ہے

قربتوں سے فاصلے بڑھتے ہیں درمیان مگر
دور رہ کر بھی کوئی دل کے قریب ہوتا ہے

زمانے بیت گئے ایک تجھے یاد کرتے کرتے
شہر دل انہیں یادوں سے تو آباد ہوتا ہے

تو جان ہے میری تو ہی جینے کی وجہ بھی
میرے اندر تو ہی تو ہر پل فقط تو ہی تو ہوتا ہے

اس کے بغیر زندگی گزر تو جائیگی فرح بی بی
ایسے ہی جیسے مکین کے بغیر گھر ویران ہوتا ہے

میں رہوں یا نہ رہوں تو رہے یا نہ رہے کیا فرق پڑتا ہے
امر تو وہ ہے --------- جو محبتوں کا امین ہوتا ہے

شربتٍ حیات پی کر اب کرنا کیا
جس کا انجام آخر کار مرنا ہوتا ہے

من میں لگی آگ کو بجھا کر دکھاؤ تو تم ہمیں بھی ذرا
دیکھوں تو بجھنے کے بعد دھواں کس قدر ہوتا ہے ۔۔۔

Rate it: Views: 29 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 27 Nov, 2017
About the Author: farah ejaz

My name is Farah Ejaz. I love to read and write novels and articles. Basically, I am from Karachi, but I live in the United States. .. View More

Visit 141 Other Poetries by farah ejaz »
 Reviews & Comments
bohoth khoob Farah sahiba bohoth umda ...
By: furrokh khan, dearborn on Dec, 11 2017
Reply Reply to this Comment
awesome farah ap shairi bhi khub kerlayti hain
By: ghazala, karachi on Nov, 30 2017
Reply Reply to this Comment
bus ji yun hi thori bohoth tuk bundi ker laitay hain ............... waisay shukriya aap ka bohoth bohoth
By: farah ejaz, Karachi on Dec, 03 2017
waah waah dear farah... kya khoob likha hai...
من میں لگی آگ کو بجھا کر دکھاؤ تو تم ہمیں بھی ذرا
دیکھوں تو بجھنے کے بعد دھواں کس قدر ہوتا ہے ۔۔۔
boht zabrdast dil ki akaasi kerti her line.... stay blessed!!!
By: Faiza Umair, Lahore on Nov, 29 2017
Reply Reply to this Comment
shukriya faiza....... aik lumbay arsay kay baad kuch behtar likh payee hun .....Jazak Allah
By: farah ejaz, Karachi on Dec, 03 2017
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.