آرہی ہوں دوستو پھر میں نئی رفتار سے
Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

آرہی ہوں دوستو پھر میں نئی رفتار سے
جانے کس صحرا سے ہے تم نے پکارا پیار سے

پھیر لوں آنکھیں چمن سے کس طرح ممکن ہے یہ
میرا تو رشتہ ہے دیکھو چھاؤں سے ، اشجار سے

یاد ہے نا آپ کو وہ شام کا پچھلا پہر
میں جدا جب ہو گئی تھی حاشیہ بردار سے

اب محبت کی کہانی لب پہ آئی ہے تو کیوں
ہر کوئی بدظن ہے دیکھو پھر مرے کردار سے

دیکھ جا آ کر شکستِ عشق کی تصویر کو
کٹ رہی ہے زندگی یہ تیر سے ، تلوار سے

رنج و غم کو کاغذوں پہ یوں بنایا ہے کہ اب
میرا چہرہ کٹ گیا ہے درد کی پرکار سے

زخمی زخمی رات ہے اور چاند بھی تنہا یہاں
میں بھی وشمہ جا رہی ہوں محفلِ اغیار سے

Rate it: Views: 19 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 12 Nov, 2017
About the Author: washma khan washma

I am honest loyal.. View More

Visit 4092 Other Poetries by washma khan washma »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.