اس کا کوئی نہیں ملال ہمیں
Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

اس کا کوئی نہیں ملال ہمیں
اجنبی کا رہا خیال ہمیں

جیسے جیسے اسے ملا رتبہ
ویسے ویسے رہا زوال ہمیں

چاند تاروں میں روشنی ہے مگر
تیری ملتی نہیں مثال ہمیں

پھر اکیلے ہیں ہم زمانے میں
پھر سے آ کر تو دیکھ بھال ہمیں

اُس کو دل میں مقیم ہم نے کیا
اُس کی یادوں نے مالا مال ہمیں

تیرے قدموں میں جان رکھ دی ہے
ہر اذیت سے اب نکال ہمیں

میری آنکھوں کی وشمہ لے کے سحر
شام بخشی ہے خوش جمال ہمیں

Rate it: Views: 3 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 04 Oct, 2017
About the Author: washma khan washma

I am honest loyal.. View More

Visit 4101 Other Poetries by washma khan washma »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.