ساگر حیدرعباسی کی کتاب (میرے انمول دکھ سے انتخاب)
Poet: SAGAR HAIDER ABBASI
By: shamrooz younus, karachi

یہ ہر اک بات پہ تم جو وفا کی بات کرتے ہو
فرشتہ ڈھونڈتے ہوتم خدا کی بات کرتے ہو

زمانے میں بھلا کیسے ملے گی یہ وفا تم کو
دلوں سے کھیلتے ہو تم انا کی بات کرتے ہو

تمہارے ہی ستم ہیں یہ کرم بھی اب تمہارے ہیں
مٹا کر بھی ہمیں تم جو دعا کی بات کرتے ہو

پکاریں کس طرح تم کو اے ساحل کے تماشاہی
یہ لب خاموش ہیں اور تم صدا کی بات کرتے ہو

یہ ہر اک بات پہ تم جو وفا کی بات کرتے ہو
فرشتہ ڈھونڈتے ہوتم خدا کی بات کرتے ہو

Rate it: Views: 21 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 21 Aug, 2017
About the Author: shamrooz younus

Visit Other Poetries by shamrooz younus »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
bohat shandaar sir g
By: shamrooz younus, karachi on Aug, 23 2017
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.