جگنو بچے
Poet: ابنِ منیب
By: ابنِ مُنیب, سویڈن

یہ شمعیں چھوٹی چھوٹی سی
کل ممکن ہے خورشید بنیں
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
بے درد اندھیرے مِٹ جائیں
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
ظالم نہ رہے ظلمت نہ رہے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
ہر جان فروزاں ہو جائے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
رہبر نہ رہے رہزن نہ رہے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
یاں رزق میں سب کا حصہ ہو
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
سائل نہ رہے صاحب نہ رہے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
کھلیان برابر بٹ جائیں
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
آقا نہ رہے بندہ نہ رہے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
کمزور کی خدمت پہلے ہو
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
عہدہ نہ رہے رتبہ نہ رہے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
سب علم کے طالب ہو جائیں
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
عالم نہ رہے جاہل نہ رہے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
قانون محافظ ہو سب کا
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
بیکَس نہ رہے بے بس نہ رہے
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
تحقیق ہمارا شیوہ ہو
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
یاں صید نہ ہو صیاد نہ ہو
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
احساس کے قیدی ہوں ہم سب
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
آزاد جو ہو آزاد نہ ہو
ہاں ممکن ہے اے اہلِ چمن
یہ سن رکھّو اور جان رکھو
ان چھوٹی چھوٹی شمعوں سے
غافل نہ رہو غافل نہ رہو
یہ شمعیں چھوٹی چھوٹی سی
کل ممکن ہے خورشید بنیں
کل ممکن ہے اے اہلِ چمن
بے درد اندھیرے مِٹ جائیں

Rate it: Views: 6 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 13 Aug, 2017
About the Author: Ibnay Muneeb

https://www.facebook.com/Ibnay.Muneeb.. View More

Visit 122 Other Poetries by Ibnay Muneeb »
 Reviews & Comments
اِنشاءاللہ انشاء اللہ آمین آمین
ِ اچمن بہت مثبت سوچ ہے اللہ اس خواب کی تکمیل کی توفیق و نصرتعنایت فرمائے ہل
By: uzma, Lahore on Aug, 14 2017
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.