میری ہر ایک ریاضت کا ثمر دیتا ہے
Poet: حیاء غزل
By: Haya Ghazal, Karachi

میری ہر ایک ریاضت کا ثمر دیتا ہے
ہاتھ اٹھتے ہی دعاؤں میں اثر دیتا ہے

خالقِ خلق وہ ہے ،ایک مجازی میرا
جب میں مانگوں وہ رہائی کا سفر دیتا ہے

خامشی کو مری الفاظ عطا کر کے نئے
مردہ کاغذ کے مسامات کو بھر دیتا ہے

مجھ کو دیتا ہے اسیری کا وہ مژدہ ایسے
میری پرواز کو پر دے کے کتر دیتا ہے

مجھ کو دکھتا ہے سپیدہ بھی سیاہی کی طرح
ایسے بینائی کو وہ حسنِ نظر دیتا ہے

میں نے مانگی ہی نہیں عزت و تکریم کبھی
اس کا احسان ہے بن مانگے ہی دھر دیتا ہے

رات بھر ہوتا ہے کتنے ہی خزانوں کا نزول
اس پہ یہ اشک مجھے صورتِ ذر دیتا ہے

Rate it: Views: 36 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 28 Jul, 2017
About the Author: Haya Ghazal

I am freelancer poetess & witer on hamareweb. I work in Monthaliy International Magzin as a buti tips incharch.otherwise i write poetry on fb poerty p.. View More

Visit 128 Other Poetries by Haya Ghazal »
 Reviews & Comments
very Nice
Good luck forever
be happy and stay blessed always
By: uzma, Lahore on Jul, 31 2017
Reply Reply to this Comment
Thanks uzma God bless you
By: Haya Ghazal, Karachi on Jan, 20 2018
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.