یہ کس خلش نے پھر اس دل میں آشیانہ کیا
Poet: Faiz Ahmed Faiz
By: Luqman, khi

یہ کس خلش نے پھر اس دل میں آشیانہ کیا
پھر آج کس نے سخن ہم سے غائبانہ کیا

غم جہاں ہو رخ یار ہو کہ دست عدو
سلوک جس سے کیا ہم نے عاشقانہ کیا

تھے خاک راہ بھی ہم لوگ قہر طوفاں بھی
سہا تو کیا نہ سہا اور کیا تو کیا نہ کیا

خوشا کہ آج ہر اک مدعی کے لب پر ہے
وہ راز جس نے ہمیں راندۂ زمانہ کیا

وہ حیلہ گر جو وفا جو بھی ہے جفاخو بھی
کیا بھی فیضؔ تو کس بت سے دوستانہ کیا
 

Rate it: Views: 156 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 08 May, 2017
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.