سگریٹ
Poet: محمد اطہر طاہر
By: Athar Tahir, Haroonabad

وہ کہتی تھی اگر تم نے
کبھی سگریٹ جلائی تو،
بس اتنا یاد رکھنا تم
وہ سگریٹ نہیں ہوگی،
تم میرا دل جلاؤ گے،،
اگر تم دل جلاؤ گے
میں تم کو بھول جاؤنگی،،
مگر۔۔۔!
نہ سگریٹ جلائی ہے
نہ ہی دل جلایا ہے،،
اُن کی چاہت میں ہم نے
اپنا آپ گنوایا ہے،،
اب ماہ و سال بیتے ہیں،
وہ ہم کو بھول بیٹھے ہیں،،
کوئی اُن سے یہ پوچھے
اب سگریٹ کی اجازت ہے؟؟
یا یونہی منتظر بیٹھوں
میں کب تک منتظر بیٹھوں؟؟

Rate it: Views: 75 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 07 May, 2017
About the Author: Athar Tahir

Visit 57 Other Poetries by Athar Tahir »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Bohat khob, excellent
By: Asra Ghori, Karachi on May, 20 2017
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.