گُزرے ہوئے لمحات کا سایہ ہے اب تلک
Poet: محمد مسعود نونٹگھم یو کے
By: Mohammed Masood, Nottingham

گُزرے ہوئے لمحات کا سایہ ہے اب تلک
مجھ کو میرے جنون نے ستایا ہے اب تلک

خوشیاں تو کہیں دور بہت دور کھو گئیں
ہم کو غموں نے بار بار رولایا ہے اب تلک

چھوڑا ہے جب سے دنیا کے اِس کار زار کو
دل میں ایک خواب بنایا ہے اب تلک

جی میں میرے پُھول میرا ہمسفر اور میں
یوں اپنے گھر میں باغ لگایا ہے اب تلک

نجانے ابھی کتنی آزمائشیں ہیں باقی
اللہ نے میرا ظرف آزمایا ہے اب تلک

کوشش ہے میری اِس امتحان میں سرخرو ہوں
ورانہ تو دل کو درد ہی بھایا ہے اب تلک

Rate it: Views: 44 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 26 Apr, 2017
About the Author: Mohammed Masood

محمد مسعود اپنی دکھ سوکھ کی کہانی سنا رہا ہے

.. View More

Visit 349 Other Poetries by Mohammed Masood »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.