جو ملتا پیار تمہارا ۔۔۔۔۔۔
Poet: dastagir nawaaz
By: Dastagir Nawaaz, Hyderabad

جو ملتا پیار تمہارا سدھر گئے ہوتے
بھٹکتے پھرنے سے بہتر تھا گھر گئے ہوتے

ہمارے دل کا اندھیرا کہیں چلا جاتا
تمہارے حسن کے جلوے بکھر گئے ہوتے

کبھی نہ راہ بھٹکتے یہ قافلے اپنی
جو راہبر سبھی سیدھی ڈگر گئے ہوتے

ہماری داستاں ہوتی عظیم دنیا میں
وفا کی راہ میں چپ چاپ مرگئے ہوتے

نواز بہہ گئے ٓانکھوں سے اشک کی صورت
کسی کی ٓانکھ میں رہ کر سنور گئے ہوتے

Rate it: Views: 24 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 14 Feb, 2017
About the Author: Dastagir Nawaaz

I'M An Hyderabadi(Deccan) On 26th April 1971. Born in A Pathan Family My Name Is Dastagir Mohammed Khan (Yousuf zai) Pen Name Dastagir Nawaaz Given By.. View More

Visit 13 Other Poetries by Dastagir Nawaaz »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.