آنکھ سے دل میں آنے والا
Poet: Arzoo Lakhnavi
By: Sadiq, khi

آنکھ سے دل میں آنے والا
دل سے نہیں اب جانے والا

گھر کو پھونک کے جانے والا
پھر کے نہیں ہے آنے والا

دوست تو ہے نادان ہے لیکن
بے سمجھے سمجھانے والا

آنسو پونچھ کے ہنس دیتا ہے
آگ میں آگ لگانے والا

ہے جو کوئی تو دھیان اسی کا
آنے والا جانے والا

حسن کی بستی میں ہے یارو
کوئی ترس بھی کھانے والا

ڈال رہا ہے کام میں مشکل
مشکل میں کام آنے والا

دی تھی تسلی یہ کس دل سے
چپ نہ ہوا چلانے والا

خواب کے پردے میں آتا ہے
سوتا پا کے جگانے والا

اک دن پردہ خود الٹے گا
چھپ چھپ کے ترسانے والا

آرزوؔ ان کے آگے ہے چپ کیوں
تم سا باتیں بنانے والا

Rate it: Views: 53 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 05 Dec, 2016
About the Author: owais mirza

Visit Other Poetries by owais mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Arzoo Lakhnavi is the poet who wrote many beautiful poetries but I especially like 'Aankh se dil me anay wala', the words which he choose in this poetry are quiet common and really easy to understand the meaning.
By: aslam, khi on Dec, 29 2016
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.