آرزو
Poet: faiz ahmed faiz
By: اسماء خان, shahjahanpur india

روس کے ملک اشعراء رسول ہمزہ توف کی مارکہ آرا نظم

مجھے معجزوں پہ یقیں نہیں
مگر آرزو ہے کہ جب قضا

مجھے بزم دہر سے لے چلے
تو پھر ایک بار یہ عزم ہے

کہ لحد سے لوٹ کے آسکھوں
ترے در پہ آکے صدا کروں

تجھے غم گسار کی ہو طلب
تو ترے حضور میں آرہوں

یہ نہ ہو کہ سوئے رہِ عدم
میں پھر ایک بار روانہ ہوں

ترجمہ فیض احمد فیض نسخہ ہائے وفا

Rate it: Views: 5490 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 04 Sep, 2012
About the Author: اسماء خان

Visit 2 Other Poetries by اسماء خان »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.