شہ سرخیوں میں خون کی اک دھار دیکھ کر
Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

شہ سرخیوں میں خون کی اک دھار دیکھ کر
میں رو رہی ہوں شام کا اخبار دیکھ کر

قسمت میں اب خزاں کا مجھے ہو چلا یقیں
پھولوں کی وادیوں میں فقط خار دیکھ کر

کیا موجِ غم ہے آنکھ میں ، دشتِ فراق ہے
دل میں یہ سوئے درد کو بیدار دیکھ کر

آیا خیالِ یار تو شعروں میں کہہ دیا
خوش ہوں میں سوچ و فکر کا معیار دیکھ کر

اپنی ہی جاں بچائی ہے دشمن نے بھاگ کر
عزم و عمل کی تیغ یا تلوار دیکھ کر

وشمہ میں بھول جاؤں گی رشتہ ہے اس سے کیا
اپنی میں اس کے سامنے پھر ہار دیکھ کر

Rate it: Views: 2 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 09 Feb, 2018
About the Author: washma khan washma

I am honest loyal.. View More

Visit 4319 Other Poetries by washma khan washma »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.