ہمیں جاگنا ہوگا
Poet: محمد یوسف راہی
By: محمد یوسف راهی, Karachi

سوئی ہوئی یہ قوم ہماری نہ جانے کب جاگے گی
کب ملے گا انصاف یہاں ظلم کی میت کب اٹھے گی

اب تک کیوں زینب کا قاتل پہنچا نہیں انجام کو
کب تک راؤ انوار کو آخر پشت پناہی ملتی رہے گی

کب تک ظالم مظلوم پر یاروں یہاں حاوی رہے گا
اپنی زبان کرکے بند کب تک یہ قوم سوتی رہے گی

کرپشن لوٹ مار اور کھلے عام غنڈہ گردی یاروں
اپنے وطن میں اپنے لوگوں کی کب تک جاری رہے گی

کیا یوں ہی محنت کا پیسہ ہم ان پر لٹاتے رہیں گے
کیا ہماری جیب خالی اور ان کی بھرتی رہے گی

قوم کو اب جاگنا ہوگا بس قوم کو اب اٹھنا ہوگا
اپنی قسمت اپنے ہی ہاتوں اب یاروں بدلنی پڑے گی

مخلص نہیں ہے اس ملک سے کوئی سب کو پرکھ لیا
قائم یہاں عوامی حکومت ہم ہی کو کرنی پڑے گی

اس قوم کو ہماری اے ر ہی ہونا پڑے گا اب بیدار
بیدار ہوکر ظالم کو اب اپنی طاقت دکھانی پڑے گی

Rate it: Views: 5 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 08 Feb, 2018
About the Author: محمد یوسف راهی

Visit 14 Other Poetries by محمد یوسف راهی »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.