ساتھ رہنے کا جو اقرار نہیں ہو سکتا
Poet: وشمہ خان وشمہ
By: وشمہ خان وشمہ, ملایشیا

ساتھ رہنے کا جو اقرار نہیں ہو سکتا
زندگی تجھ سے کبھی پیار نہیں ہو سکتا

جس کو دشمن سے سروکار ہو ،دولت کی ہوس
وہ مرے ملک کا سالار نہیں ہو سکتا

آج بھی دل میں ترے نام کے چرچے ہیں بہت
آج بھی درد کا اظہار نہیں ہو سکتا

جس کی مٹی میں نہ ہو پیار کا جذبہ شامل
کوئی گلشن بھی تو گلزار نہیں ہو سکتا

کتنے معصوم ہیں آنکھوں کی بصارت کھو کر
اب یہ کہتے ہیں کہ دیدار نہیں ہو سکتا

جو ابھی عزت و تکریم سے واقف ہی نہیں
وہ کبھی صاحبِ دستار نہیں ہو سکتا

اس میں گر جان بھی جاتی ہے تو جائے وشمہ
یہ مرا عشق کبھی بار نہیں ہو سکتا

Rate it: Views: 1 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 09 Oct, 2017
About the Author: washma khan washma

I am honest loyal.. View More

Visit 4101 Other Poetries by washma khan washma »
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.