کون بھنور میں ملاحوں سے اب تکرار کرے گا
Poet: Noshi Gilani
By: Zeeshan, khi

کون بھنور میں ملاحوں سے اب تکرار کرے گا
اب تو قسمت سے ہی کوئی دریا پار کرے گا

سارا شہر ہی تاریکی پر یوں خاموش رہا تو
کون چراغ جلانے کے پیدا آثار کرے گا

جب اس کا کردار تمہارے سچ کی زد میں آیا
لکھنے والا شہر کی کالی ہر دیوار کرے گا

جانے کون سی دھن میں تیرے شہر میں آ نکلے ہیں
دل تجھ سے ملنے کی خواہش اب سو بار کرے گا

دل میں تیرا قیام تھا لیکن اب یہ کسے خبر تھی
دکھ بھی اپنے ہونے پر اتنا اصرار کرے گا
 

Rate it: Views: 7 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 28 Jul, 2017
About the Author: Owais Mirza

Visit Other Poetries by Owais Mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
'Janay Kon Si Dhun Me Tere Shehr Me Aa Niklay Hain', is one the best line which I like from the Ghazal of Noshi Gilani. I have a large collection of Noshi Gilani's poetry.
By: rabia, khi on Jul, 28 2017
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.