آنکھوں میں کسی یاد کا رس گھول رہی ہوں
Poet: Rehana Qamar
By: Akram, khi

آنکھوں میں کسی یاد کا رس گھول رہی ہوں
الجھے ہوئے پلو سے گرہ کھول رہی ہوں

وہ آئے خریدے مجھے پنجرے میں بٹھا دے
میں باغ میں مینا کی طرح بول رہی ہوں

ہر بار ہوا ہے مرے نقصان کا سودا
کہنے کو ہمیشہ سے میں انمول رہی ہوں

Rate it: Views: 15 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 11 Jan, 2017
About the Author: owais mirza

Visit Other Poetries by owais mirza »

Currently, no details found about the poet. If you are the poet, Please update or create your Profile here >>
 Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.