ڈاکٹر کی داستانِ محبت
Poet:
By: Kashif Imran, Mianwali

دل بہلا کے نہ محبت کو پامال کریں
سیرپ کو اچھی طرح ہلا کے استعمال کریں

دل مرا ٹوٹ گیا ، اٹھی جب اس کی ڈولی
صبح دوپہر شام بس ایک ایک ہی گولی

لوٹ آؤ کہ محبت کا سرور چکھیں
تمام دوائیں بچوں کی پہنچ سے دور رکھیں

تم سے ملنے کی کیا اب جستجو کریں
طبیعت زیادہ خراب ہو تو ڈاکٹر سے رجوع کریں

دل مرا عشق کرنے پر رضا مند رہے گا
جمعہ کے دن کلینک بند رہے گا

ایک ڈاکٹر کی اپنی محبوبہ کی یاد میں لکھی گئی ایک غزل پڑھی اچھی لگی سوچا کیوں نہ اسے ہماری ویب کے قارئین سے شیئر کر لوں امید ہے اچھی لگے گی۔ شاعر کا نام معلوم نہیں
 

Rate it: Views: 81 Post Comments
 PREV All Poetry NEXT 
 Famous Poets View more
Email
Print Article Print 19 Oct, 2016
About the Author: kashif imran

I live in Piplan District Miawnali... View More

Visit 153 Other Poetries by kashif imran »
 Reviews & Comments
Hhhhhhhhhhh nice
By: Abrish anmol, Sargodha on Nov, 21 2016
Reply Reply to this Comment
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.