‘‘شا دی نامہ‘‘

(Hukhan, karachi)

ہو گئی کیا سحر میں بارش، بس سمجھو قیامت قیامت
ہو گئی شہر ی کی کیا شادی،بس سمجھو قیامت قیامت

ہم سے کسی نے پوچھ لیا‘‘،،،بھائی،،،شادی کیا ہے؟؟؟ہم ٹھہرے سدا کے دال فرائی کھانے والے‘‘،،،ہم بولے،،شادی‘‘
بریانی ہے،،فرنی ہے،،قورمہ ہے‘‘،،،ابھی ہمارا مینیو،،،اسم تخائل کی اعلاء ترین پرواز پر تھا‘‘،،،اسے ہماری پیٹو دانشوری ذرا بھی نہ بھائی‘‘،،،ہش‘‘،،،جیسےہم کوئی کھوتا ٹائپ جانور ہوں‘‘،،، ہمیں اس کی ‘‘ہش‘‘،،،ذرا بھی اچھی نہ لگی‘‘،،
مگر کیا کرتے‘‘،،،ہش کے ساتھ ہی‘‘،،،اس نے ہمارے،،،ڈھول نما سر پر دو،،تین طبلے بجا دئیے‘‘،،،ساتھ ہی بولے‘‘،،
دنیا کے بھوکے انسانوں کے عظیم لیڈر‘‘،،اور سوچو،،غور کرو،،،شادی کیا ہے،،،وہ یہ بول کر‘‘،،،کڑی دوپہر میں بھی آسمان کو ایسے گھورنے لگے‘‘،،،جیسے ابھی کوئی ڈش اترنے والی ہو‘‘،،،ہم نے سر کو دانشورانہ انداز میں حرکت دی‘‘تو،،،
وہ پر امید نظروں سے ہمیں دیکھنے لگے‘‘،،،ہم بولے،،،شادی دو کا سنگم ہے‘‘،،،وہ واہ واہ کر اٹھے‘‘،،،آگے بھی بولو‘‘،،
ان سے صبر نہیں ہورہا تھا‘‘،،،ہم بولے،،،دو کا سنگم‘‘،،،پہلے نمکین‘‘،،پھر میٹھا،،،انہوں نے پھر سے طبلہ بجادیا‘‘،،،
نا معقول انسان‘‘،،،پیٹ سے آگے بھی بڑھو‘‘،،،ہم خوش ہوئے‘‘،،چلو،،کسی نے انسان تو سمجھا‘‘،،،وہ یوں گویا ہوئے،،
سوچ کو وسیع کرو،،،ہم نے پھر دانشورانہ انداز میں،،ناک کو پکڑ کے لیفٹ‘‘رائٹ ‘‘کیا،،،شادی نرا چرچا ہے،،نرا تماشا‘‘
نرا دکھاوا‘‘،،،کوئی لباس،،کوئی پیسے،،،کی نمائش،،،خودنمائی‘‘،،،فضولیات کا مجموعہ ہے شادی‘‘،،،بہت سے لوگ اک جگہ جمع ہو کر‘‘،،،دوسروں کو الو بناتے ہیں‘‘،،،بندہ مقروض ہو جاتا ہے‘‘،،اچھا خاصہ بندہ ،،بندر بن جاتا ہے‘‘،،،ابھی ہماری تقریر جاری تھی‘‘،،پھر سے ہمارے سر پہ اٹیک‘‘،،،ہم نے سوالیہ نظروں سے دیکھا‘‘،،،وہ بولے،،کھانے والی بات ہی ٹھیک تھی‘‘،،،ویسے،،،آخری دفعہ تم نے دال کے علاوہ،،اچھاکھانا کب کھایا‘‘،،ہم سوچ میں ڈوب گئے‘‘،،اب تک ابھر نہیں پائے‘‘،،،،،،،،،،
 

Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
16 Jun, 2017 Total Views: 980 Print Article Print
NEXT 
About the Author: Hukhan

Read More Articles by Hukhan: 766 Articles with 283572 views »

Currently, no details found about the author. If you are the author of this Article, Please update or create your Profile here >>
Reviews & Comments
hahaha bohoth khoob agar hum say bhi poocha jai to hum bhi yahi kahingay shadi mulab hi khorma biryani hi hay ..... Jazak Allah Hu Khairan Kaseera
By: farah ejaz, Karachi on Jul, 20 2017
Reply Reply
0 Like
thx for deep eyes for my words its a funny reality
By: hukhan, karachi on Jul, 24 2017
0 Like
hahahahahah great
By: rahi, karachi on Jun, 30 2017
Reply Reply
0 Like
thx
By: hukhan, karachi on Jun, 30 2017
0 Like
hahaha kamal
By: aslam memon, karachi on Jun, 21 2017
Reply Reply
0 Like
thx
By: hukhan, karachi on Jun, 25 2017
0 Like
hehehhehheh bhai kia bat hai kia likhte ho ap parh kar maza ajata hai ma shaa ALLAH ,,,,, :)
By: Zeena, Lahore on Jun, 16 2017
Reply Reply
0 Like
thx sister
By: hukhan, karachi on Jun, 25 2017
0 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB