دنیا کی وزنی ترین خاتون کا نصف وزن کم

 

بھارتی شہر ممبئی کے سیفی ہسپتال میں ڈاکٹر مصر سے لائی گئی دنیا کی سب سے وزنی خاتون کا آپریشن کی مدد سے نصف وزن کم کرنے میں کامیاب ہوگئے ہیں- ڈاکٹر کے مطابق آپریشن سے قبل مصری خاتون ایمان احمد العبدالآتی کا وزن 500 کلو گرام تھا جو کہ آپریشن کے بعد 250 کلو گرام رہ گیا ہے-
 


36 سالہ ایمان احمد العبدالآتی کو خاص طور پر وزن کم کروانے کے لیے مصر سے بھارت لایا گیا تھا- ایمان احمد کو چارٹرڈ طیارے کے ذریعے ممبئی لایا گیا اور دو ماہ قبل ممبئی کے سیفی ہسپتال میں ڈاکٹر مضفل لكڑاوالا کی قیادت میں ان کا آپریشن کیا گیا-

اسپتال کے ذرائع کے مطابق وزن کم ہونے کی وجہ سے اب ایمان احمد طویل وقت تک وہیل چئیر پر بھی بیٹھ سکتی ہیں- اور ان کا وزن بتدریج کم بھی ہورہا ہے- تاہم بچپن میں ہونے والے اسٹروک کی وجہ سے ایمان کا ایک حصہ مفلوج اور انہیں بولنے اور کچھ نگلنے میں دقت کا سامنا کرنا پڑتا ہے-

ڈاکٹر کا کہنا ہے کہ ایک بار ان کا وزن اتنا کم ہوجائے کہ سی ٹی اسکین کی مشین میں سما سکیں تو ہم اس اسٹروک کی وجہ جاننے میں بھی کامیاب ہوجائیں گی-
 


مصری خاتون ایمان احمد دنیا کی وزنی ترین خاتون تھیں لیکن اب وزن کم ہونے کے بعد ایسا نہیں رہا ہے-

دوسری جانب ایمان احمد کے خاندان کے مطابق اس غیرمعمولی وزن کے باعث وہ گزشتہ 25 سالوں سے گھر میں ہی قید تھیں- ان کا وزن 11 سال کی عمر میں اس حد تک زیادہ ہوگیا تھا کہ یہ چل بھی نہیں سکتیں تھیں-

Disclaimer: All information is provided here only for general health education. Please consult your health physician regarding any treatment of health issues.
Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
20 Apr, 2017 Total Views: 3259 Print Article Print
NEXT 
Reviews & Comments
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
An Indian hospital treating an Egyptian woman, believed to have been the world's heaviest woman, says she has lost 250kg (550lbs) after surgery. Eman Abd El Aty's family said she originally weighed 500kg - and was unable to leave her home for 25 years.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB