نوجوان لڑکی نے دیوتا کو خوش کرنے کے لیے اپنی زبان کاٹ ڈالی

 

بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں ہندو مذہب کی پیروکار ایک 19 سالہ نوجوان لڑکی نے اپنے دیوتا کو خوش کرنے کے لیے اپنی زبان کاٹ لی٬ اس نے ایسا کیوں کیا؟ آگے بتاتے ہیں لیکن سب سے حیران کن بات یہ ہے کہ یہ لڑکی کوئی غیر تعلیم یافتہ نہیں تھی بلکہ ایک کالج کی طالبعلم ہے-

Aarti Dubey ٹی آر ایس کالج سے گریجویشن کی تعلیم حاصل کر رہی ہیں اور ان کا کہنا ہے کہ “ میرے خواب میں ماتا کالی نے آکر کہا کہ اگر تم اپنی تمام خواہشیں پورا کرنا چاہتی ہو تو بدلے میں تمہیں اپنی زبان کاٹنا ہوگی“-
 


اسی خواب کو حقیقت میں بدلنے کے لیے آرتی نے دوسرے روز اپنے علاقے Reeva میں موجود مندر کا رخ کیا اور وہاں پہنچ کر اپنی زبان کی قربانی پیش کی- تاہم آرتی کی یہ قربائی انتہائی غیر معمولی تھی کیونکہ وہ ایک تعلیم یافتہ نوجوان خاتون ہے-

ایک مقامی صحافی شیام مشرا کا کہنا ہے کہ “ اپنی خواہشات کو پورا کرنے کے لیے دیوتاؤں پر اپنے اعضاﺀ قربان کرنے کے واقعات پیش آتے رہتے ہیں لیکن کسی تعلیم یافتہ اور پڑھے لکھے شخص کا ایسی حرکت کرنا خود تعلیم پر ایک سوالیہ نشان ہے- ان پڑھ لوگ تو ان توہمات اور روایات کے پابند ہوتے ہی ہیں لیکن کسی تعلیم یافتہ فرد کا ایسا قدم اٹھانا معاشرے کے لیے اچھا شگون نہیں ہے“-

عینی شاہدین کے مطابق یہ نوجوان لڑکی کالی ماتا کے مندر پہنچی اور اس نے عام مذہبی رسومات کی ادائیگی کا سلسلہ شروع کردیا لیکن جلد ہی اس نے اپنی زبان ایک تیز دھاری بلیڈ سے کاٹ لی جس کے بعد درد کی وجہ سے اس کی حالت غیر ہونے لگی-

تاہم مندر کے پچاریوں نے اسے طبی امداد فراہم کرنے یا پھر ایمبولینس کو بلانے کے بجائے اس کا سر اسکارف سے ڈھک دیا اور اس صحتیابی کے لیے دعائیں مانگنا شروع کردیں-
 


تقریباً 5 گھنٹے بعد لڑکی کی حالت بہتر ہوگئی جبکہ اس دوران کسی نے بھی اس کی کوئی مدد نہیں کی- حیران کن طور پر لڑکی دوبارہ اٹھی اور اس نے اپنی مذہبی رسومات ادا کرنا شروع کردیں-

آرتی کے بھائی کا کہنا ہے کہ “ آرتی نے مجھے اپنے خواب کے بارے میں بتایا تھا لیکن میں تصور بھی نہیں کرسکتا تھا کہ وہ ایسی بچکانہ حرکت کرے گی- اور مجھے اس وقت اس بات کا اندازہ بھی نہیں ہوا کہ وہ اس حد تک سنجیدہ ہے کہ وہ حقیقت میں اپنی زبان کی قربانی پیش کرے گی“-

Email
Rate it:
Share Comments Post Comments
17 Aug, 2016 Total Views: 5875 Print Article Print
NEXT 
Reviews & Comments
Dunya Ki Sab Say Ziada Toham Parast Qoum Hai Yeh...
By: Sohail, Karachi on Aug, 18 2016
Reply Reply
1 Like
jahliat toba ......................allah maaf kare.......koi bhi dharam aesa karne ka nahi kehta ,na hi jadeed hinduism main aesa koi scene hai.
By: azeem, paklahore on Aug, 18 2016
Reply Reply
0 Like
Post your Comments Language:    
Type your Comments / Review in the space below.
In a shocking incident that occurred recently in India’s Madhya Pradesh state, a 19-year-old college student sliced off her own tongue as an offering to the Goddess Kali, in exchange for the fulfillment of her wishes.
MORE ON ARTICLES
MORE ON HAMARIWEB